جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

پی ڈی ایم کو تقسیم کا شکار خود ن لیگ اور جے یو آئی ایف کررہی ہیں: سعید غنی

تقسیم کا شکار

کراچی: سعید غنی کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی اور اے این پی کی غیر موجودگی میں پی ڈی ایم نا مکمل رہے گا، پی ڈی ایم کو تقسیم کا شکار تو خود ن لیگ اور جے یو آئی ایف کررہی ہیں۔

صوبائی وزیر تعلیم سندھ اور مرکزی رہنما پیپلز پارٹی سعید غنی کا صحافیوں سے چائے پر گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کسی سیاسی جماعت کے ماتحت نہیں ہے کہ اس کو شوکاز نوٹس دیا جائے، پیپلز پارٹی، مسلم لیگ ن سمیت کسی سیاسی جماعت کو کسی دوسری پارٹی پر رائے یا فیصلہ مسلط کرنے کا اختیار نہیں، پیپلز پارٹی اور اے این پی کی غیر موجودگی میں پی ڈی ایم نا مکمل رہے گا۔

سعید غنی کا کہنا تھا کہ دونوں سیاسی جماعتوں کے بغیر ہونے والے اجلاس کی کوئی حیثیت نہیں، پی ڈی ایم میں شامل دونوں جماعتوں کو پہلے پیپلز پارٹی سے معذرت کرنا ہوگی، اپوزیشن کی تقسیم پر پہلے دن سے موقف تھا کہ اسکا فائدہ پی ٹی آئی حکومت کو ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں: استعفے پر اگر ہم نے دھوکہ دیا تو جس نے دینے تھے وہ تو دیں: سعید غنی

انہوں نے کہا کہ حکومت کو گھر بھیجنے کے لئے اگر اپوزیشن کی دیگر جماعتوں کی جانب سے سنجیدہ کوشش ہوئی تو پیپلز پارٹی پیچھے نہیں رہے گی،

پیپلز پارٹی کی کسی سے کوئی ڈیل نہیں ہوئی ، آصف زرداری کو علالت کے باعث ضمانت ملی، اگر ڈیل ہوتی تو کیا خورشید شاہ بغیر کسی جرم کے قید میں ہوتے؟، فریال تالپور کے کیس جو قانونی طور پر سندھ منتقل ہونا تھے اس میں روڑے اٹکائے جاتے؟۔

ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف علاج کے لئے باہر چلے گئے مگر ڈیل کی بات نہیں کی گئی، شہباز شریف، مریم نواز اور شہباز کی ضمانتیں ہوئیں مگر ڈیل کی بات نہیں ہوتی۔ آصف زرداری جو حقیقتاً بیمار ہیں نے واضح کہا ہے کہ وہ اس حکومت کو علاج کے لئے باہر جانے کی دخواست نہیں دیں گے۔

صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کو ایسے پی ڈی ایم کے ایسے اجلاس میں نوٹس دیا گیا جس میں پیپلزپارٹی کی نمائندگی ہی نہیں تھی، پی ڈی ایم کو تقسیم کا شکار تو خود ن لیگ اور جے یو آئی ایف کررہی ہیں۔

متعلقہ خبریں