جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

رات گئے جامشورو گرڈ اسٹیشن میں آگ لگنے سے گھارو، سیہون اور حیدرآباد کو بجلی کی فراہمی معطل، صبح بحال

جامشورو گرڈ

حیدرآباد : جامشورو تھرمل پاور ہاؤس کے گرڈ اسٹیشن میں اچانک آگ بھڑک اٹھی۔ آگ لگنے کے بعد حیدرآباد سمیت ملحقہ علاقے تاریکی میں ڈوب گئے۔

بجلی کی تاریں سڑک پہ گرنے سے انڈس ہائی وے بھی بلاک ہو گئی۔ حیدرآباد کے تمام گرڈ اسٹیشن کے ایک سو دس فیڈرز پر بجلی کی فراہمی منقطع ہوئی۔

جامشورو پاور پلانٹ سے گھارو، سیہون اور حیدرآباد سمیت دیگر ملحقہ علاقوں کو بجلی فراہم کی جاتی ہے۔ حیسکو چیف نے جامشورو گرڈ اسٹیشن کا دورہ کرکے صورت حال کاجائزہ لیا۔

ترجمان پاور ڈویژن نے جامشورو گرڈ پر آگ لگنے سے متعلق اپنے بیان میں کہا کہ پاور ڈویژن نے تمام واقعے کی ابتدائی ٹیکنکل رپورٹ طلب کرلی ہے۔ رات 1:45 پر این ٹی ڈی سی کے 500 کے وی اور جامشورو گرڈ کے 132 کے وی سوچ یارڈ میں اچانک فلیش کی وجہ سے آگ لگی تھی۔

یہ بھی پڑھیں : کراچی کے مختلف علاقوں میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 15 گھنٹے سے بڑھ گیا

پاور ڈویژن کا کہنا تھا کہ آگ لگنے کی وجہ سے حیسکو کے علاقوں میں بجلی متاثر ہوئی، این ٹی ڈی اور حیسکو کی ٹیمیں فوری موقع پر پہنچیں اور آگ پر فوری قابو پالیا، تقریباً 2 گھنٹوں میں این ٹی ڈی سی کا پورا 500 اور 220 کے وی کا سرکٹ بحال کر دیا گیا۔ نیشل گرڈ سے بجلی کی متاثرہ 132 گرڈ سٹیشنز کو بجلی کی بحالی 2 گھنٹوں میں ہی مکمل کرلی گئی۔

ترجمان پاور ڈویژن کے مطابق کراچی کو نیشل گرڈ سے سپلائی ابتدائی ٹرپنگ کے فورا بعد بحال کر دی گئی ہے۔ حیسکو کا بجلی تقسیم کار نظام بھی کافی حد تک بحال ہو چکا ہے اور صارفین کو بجلی کی فراہمی جاری ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ وفاقی وزیر پاور جناب عمر ایوب خان پورے بحالی کے آپریشن کی مسلسل نگرانی کرتے رہے اور انہوں نے ایم ڈی این ٹی ڈی سی، اور موقع پر موجود تمام ٹیموں کے کاوشوں کو سراہا ہے۔

متعلقہ خبریں