جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

نیب کو صوبائی وزیر انور سیال کے گھر پر چھاپے مارنے سے روک دیا گیا

صوبائی وزیر انور سیال

کراچی : سندھ ہائی کورٹ نے صوبائی وزیر سہیل انور سیال کی ضمانت میں 12 نومبر تک توسیع کردی۔

سندھ ہائیکورٹ میں پیپلز پارٹی رہنماء اور صوبائی وزیر سہیل انور سیال ودیگر کی درخواست ضمانت کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے نیب کو انور سیال اور ان کے رشتے داروں کے گھروں پر چھاپے مارنے سے روک دیا۔

جسٹس کے کے آغا نے ریمارکس دیئے کہ نیب کو اختیار نہیں کسی کے گھر پر سرچ وارنٹ کے بغیر چھاپہ مارے، نیب کسی کے گھر جا کر بلاجواز خواتین کو حراساں نہیں کرسکتا۔ نیب اہلکاروں کو چاہیے چھاپوں کے دوران خواتین پولیس اہلکار بھی ساتھ لے جایا کریں۔ نیب کو سوسائٹی اور اس کے اقدار کا بھی خیال کرنا ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں : سندھ ہائیکورٹ : وزیر اعلیٰ سندھ کے صوبائی مشیر و معاونین خصوصی کی تقرری چیلنج

وکیل شیزاز راجپر نے کہا کہ نیب نے بیمار والد مرحوم چاچا اور دیگر رشتہ داروں کے گھروں پر چھاپے مارے۔ نیب نے سرچ وارنٹ کے بغیر چھاپے مارے اور خواتین کو بھی حراساں کیا۔

نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کے بتایا کہ سہیل انور سیال اور دیگر کے خلاف انکوائری مکمل کرلی، جائیدادوں کی قیمتوں کا تخمینہ لگانا باقی ہے، مہلت دی جائے۔

عدالت نے سہیل انور سیال، ظفر سیال اور جمیل سومرو کی ضمانت میں 12 نومبر تک توسیع کردی۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر نیب سے پیش رفت رپورٹ طلب کرلی۔

متعلقہ خبریں