جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

وفاقی حکومت کا وی آئی پیز کی حفاظت اور پروٹوکول کے لیئے نئی فورس بنانے کا فیصلہ

وی آئی پیز کی حفاظت

اسلام آباد : رؤف کلاسرا نے بتایا ہے کہ وزیراعظم کی منظوری سے ایک وی آئی پیز کی حفاظت اور پروٹوکول کے لیئے نئی فورس بنانے کا فیصلہ کرلیا گیا ہے۔

سینئر صحافی و تجزیہ کار رؤف کلاسرا نے جی ٹی وی کے پروگرام مدمقابل میں انکشاف کیا ہے کہ عمران خان حکومت نے حکومتی شخصیات و دیگر وی آئی پیز کے لیے نئی فورس بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جو کوئی بھی حکومت میں آتا ہے، نئی فورس بناتا ہے۔ ذوالفقار بھٹو نے ایف ایس ایف فورس بنائی تھی، جس کے سربراہ بعد میں بھٹو کے خلاف قتل کیس میں عدالت میں وعدہ معاف گواہ بنے۔

یہ بھی پڑھیں : پاکستان بزنس کنفیڈنس انڈیکس پر 9 فیصد اضافہ ہوا ہے: وزیراعظم

ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے بھی ایلیٹ فورس یہ کہہ کر بنائی کہ فوجی مارشل لاء لگا کر چلے جاتے ہے اور ان کی مزاحمت کرنے والا کوئی نہیں ہوتا، لیکن اس کا مقصد اپنی اور اپنی فیملی کی حفاظت کرنا اور اگر فوجی آجائے تو مزاحمت کرنا بھی تھا۔

سینئر صحافی نے انکشاف کیا کہ گزشتہ روز کابینہ اجلاس میں یوسف نسیم کھوکر اور شیخ رشید نے تجویز دی کہ آسلام آباد پولیس کو فارغ کرکے نئی فورس بنائی جائے، جو صرف وی آئی پیز کی حفاظت  اور پروٹوکول دے۔ سیکریٹری داخلہ نئی فورس بنانے کی سمری بھی کابینہ کو پیش کرنے کا حکم دے دیا گیا ہے۔

رؤف کلاسرا نے مزید بتایا کہ نئی سیکورٹی فورس جدید اسلحہ اور بہترین تربیت یافتہ افراد پر مشتمل ہوگی، جو وزیراعظم، صدر، وزراء، گورنرز، وزرائے اعلی اور دیگر وی آئی پیز کی سیکورٹی اور پرٹوکول کے لیے تعینات کیے جائے گے۔

انہوں نے کہا کہ نئی فورس کی وزیراعظم نے منظوری دے دی ہے، یہ فیصلہ ماضی کے بیانات کے خلاف ہے۔

متعلقہ خبریں