جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

پنجاب اسمبلی نے ضمنی بجٹ 2019-20 کی منظوری دیدی

بجٹ

لاہور: پنجاب اسمبلی نے 1 کھرب 7 ارب 51 لاکھ 12 ہزار 742 روپے مالیت کے ضمنی مطالبات ذر 2019-20 کثرت رائے منظور کر لیے ہیں۔ وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار کہتے ہیں ماضی میں جاری منصوبوں کو روک دیا جاتا تھا جسکی مثال پنجاب اسمبلی کی بلڈنگ ہے۔

پنجاب اسمبلی کا اجلاس سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہی کی زیر صدارت شروع ہوا۔ پنجاب کے اجلاس سے وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹڈی دل اور کورونا وائرس کی وبا کے دوران حکومت ایمانداری سے کام کر رہی ہے۔ تحریک انصاف کی حکومت میں فیصلے اور آفسرز کی تعیناتیاں میرٹ پر ہو رہے ہیں۔

عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ جنوبی پنجاب کے لیے کل سے ایڈیشنل آئی جی اور چیف سیکرٹری کے احکامات جاری کر دیے گے ہیں۔ تحریک انصاف کی حکومت عوام کے سامنے جوابدہ ہے۔

وزیر اعلی پنجاب نے لاء ڈیپارٹمنٹ، اسمبلی سیکرٹریٹ اور فنانس ڈیپارٹمنٹ ملازمین کیلئے تین ماہ کی اضافی تنخواہ دینے کا اعلان کردیا۔

ایوان نے سپلمنٹری بجٹ 2019-20 کثرت رائے سے منظور کر لیا ہے۔ پنجاب اسمبلی نے 1 کھرب 7 ارب 51 لاکھ 12 ہزار 742 روپے مالیت کے ضمنی مطالبات ذر 2019-20 کثرت رائے منظور کر لیے ہیں۔

سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہی کا کہنا تھا پنجاب کا بجٹ منظور ہونے پر وزیراعلی پنجاب اور تمام اراکین اسمبلی کو مبارکباد پیش کرتا ہوں۔

ان کا کہان تھا کہ شروع شروع میں بہت تنقید ہوئی کہ ہوٹل میں اخراجات زیادہ ہو رہے ہیں لیکن بجٹ اجلاس کا صرف تینتیس لاکھ روپے رینٹ بنا ہے۔

متعلقہ خبریں