جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

بلوچستان میں بارشوں کی تباہی، کئی علاقے سیلابی ریلے سے متاثر، آمدورفت معطل، ایک بچہ ڈوب کر جاں بحق

بچہ ڈوب کر جاں

کوئٹہ : مون سون بارشوں نے بلوچستان میں شدید تباہی مچادی ہے، کئی علاقے سیلابی ریلے سے متاثر ہیں، مکانات، مال مویشی پانی کی نذر ہورہے ہیں، کوئٹہ میں ایک بچہ برساتی نالے میں ڈوب کر جاں بحق ہوگیا۔

بلوچستان میں مون سون بارشوں کا سلسلہ جاری ہے، کوئٹہ کے علاقے کلی ناصران میں 4 بچے برساتی نالے میں ڈوب گئے، علاقہ مکینوں نے 3 بچوں کو بحفاظت بچا لیا، جبکہ ایک بچہ ڈوب کر جاں بحق ہوگیا۔

بولان، سبی اور ہرنائی میں بارشوں کے بعد درمیانے درجے کا سیلاب ہے، حب ڈیم میں پانی کی سطح بلند ہونے سے سیلابی صورتحال پیدا ہوگئی۔ ہرنائی کوئٹہ اور ہرنائی پنجاب کی قومی شاہراہوں پر ٹریفک معطل ہے۔

یہ بھی پڑھیں : شہر کے مختلف علاقوں میں بارش کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری

صوبے کے مختلف علاقوں میں رابطہ سڑکیں بہہ جانے سے آمدورفت معطل ہوگئی ہے۔ خضدار کے علاقے کرخ، مولہ، زہری، وڈھ اور نال کے علاقوں میں مال مویشی سیلابی ریلے کی نذر ہوگئے۔

خضدار میں کچے مکانات کی دیواریں گر گئیں، کھڑی فصلوں کو نقصان پہنچا ہے۔ گوادر رتو ڈیرو قومی شاہراہ ایم ایٹ پر بھلونک کے مقام پر چوڑا شگاف پڑ گیا۔

مولہ سونمبانچی میں طغیانی سے شاہراہ بہہ جانے سے کرخ کا شہدا کوٹ اور خضدار کا زمینی رابطہ منقطع ہوگیا۔ کرخ کے مختلف علاقوں میں 4 سے 5 فٹ پانی لوگوں کے گھروں میں داخل ہوگیا ہے۔

نصیر آباد واس سی ملحقہ علاقوں میں موسلادھار بارش کے باعث نشیبی علاقوں کے زیر آب آنے سے درجنوں کچے مکانات منہدم ہوگئے۔

متعلقہ خبریں