جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

ریلوے ٹریک کی بحالی تاحال ممکن نہ ہوسکی، ٹرینیں مختلف ریلوے اسٹیشنز روک لیں گئیں

ریلوے ٹریک کی بحالی

کراچی : ریلوے ٹریک کی بحالی کا کام مکمل نہ ہونے کی وجہ سے ہزاروں مسافر بے یارو مددگار ہیں، کئی ٹرین ملک بھر کے مختلف ریلوے اسٹیشن میں کھڑی کردیں گئیں ہیں۔

ٹرین حادثے کے چوبیس گھنٹے سے زائد وقت گزرنے کے بعد بھی ریلوے ٹریک کی بحالی کا کام مکمل نہ ہوسکا۔ سندھ اور پنجاب کے مختلف اسٹیشنز پر چودہ ٹرینیں کھڑی ہیں، جن کے مسافروں کیلئے کسی قسم کی کوئی سہولت فراہم نہیں کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق اس وقت بھی فرید ایکسپریس لودھراں اسٹیشن، شالیمار ایکسپریس بہاولپور اسٹیشن، ہزارہ ایکسپریس سمہ سٹہ،  شاہ حُسین ایکسپریس ڈیرہ نواب صاحب، عوام ایکسپریس لیاقت پور اور رحمان بابا رحیم یارخان،  گرین لائن صادق آباد ریلوے اسٹیشن میں کھڑی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : گھوٹکی ٹرین حادثہ بوگی کا کلمپ ٹوٹنے کے باعث ہوا : زخمی مسافر کا انکشاف

دوسری طرف کراچی سے پنجاب جانے والی متعدد ٹرینیں بھی پھنس گئی ہیں۔ لاہور جانے والی ذکریا ایکسپریس گھوٹکی، سر سید ایکسپریس پنوں عاقل، فرید ایکسپریس روھڑی اسٹیشن، گرین لائن خیرپور اسٹیشن میں پھنسی ہوئی ہے۔

اسی طرح خیبر میل کو رانی پور سے تھوڑا پہلے گمبٹ کے مقام پر روک لیا گیا ہے۔ کراچی سے لاہور روانہ ہونے والی شالیمار ایکسپریس مہراب پور، ہزارہ ایکسپریس پڈ عیدن، رحمان بابا نواب شاہ، پاکستان ایکسپریس ٹنڈو آدم جبکہ قراقرم ایکسپریس حیدرآباد میں کھڑی ہے۔

ترجمان ریلوے کے مطابق  ریسکیو آپریشن کا کام مکمل کر لیا گیا ہے اور اب ٹریک کو فٹ کیا جارہا ہے، جیسے ہی ٹریک کی بحالی کا کام مکمل ہو جائے گا تو ٹرینوں کی روانگی شروع ہو جائے گی۔ پاکستان ریلوے اپنے مسافروں سے معذرت خواہ ہے کہ انہیں حادثے کے باعث پریشانی اٹھانا پڑی۔

متعلقہ خبریں