جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبر

صادقین جنھیں‌ “قاف” نے خطاطی کا رہبر بنا دیا

صادقین جنھیں‌ “قاف” نے خطاطی کا رہبر بنا دیا شہرہ آفاق مصور اور خطاط صادقین کی یہ رباعی پڑھیے۔

ہیں قاف سے خطاطی میں پیدا اوصاف
ابجد کا جمال جس کا کرتا ہے طواف
بن مقلہ ہو یاقوت ہو یا ہو یہ فقیر
ہم تینوں کے درمیان اسما میں ہے قاف

صادقین شاعر بھی تھے اور رباعی ان کی محبوب صنفِ سخن۔ آج اس عجوبہ روزگار کی برسی ہے۔ صادقین نے 10 فروری 1987 کو ہمیشہ کے لیے یہ دنیا چھوڑ دی۔

یہ بھی پڑھیں صادقین کو مداحوں سے بچھڑے 31 برس بیت گئے

 

صادقین کی وجہِ شہرت اسلامی خطاطی ہے جسے انھوں‌ نے نئی جہات سے روشناس کیا۔

انھوں‌ نے قرآنی آیات اور اشعار کو انفرادیت اور نزاکتوں سے کینوس پر اتارا ہے۔

سید صادقین احمد نقوی ان کا پورا نام تھا۔ 1930 میں امروہہ کے ایک گھرانے میں آنکھ کھولی۔ ان کے دادا خطاط تھے اور یہ خاندان اس فن کے لیے مشہور تھا۔

متعلقہ خبریں