جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

جمال خاشقجی کو گرفتار یا قتل کرنے کا فرمان سعودی ولی عہد نے جاری کیا : امریکی رپورٹ

جمال

واشنگٹن : امریکی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ صحافی جمال خاشقجی کی گرفتاری یا انہیں قتل کرنے کا فرمان سعودی ولی عہد نے جاری کیا تھا۔

امریکی انٹیلی جنس رپورٹ میں بتایا گیا کہ ہمارے جائزے سے پتہ چلتا ہے کہ سعودی عرب کے ولی عہد محمد بن سلمان نے ترکی میں سعودی قونصل خانے میں مخالف صحافی جمال خاشقجی کی گرفتاری یا انہیں قتل کرنے کے آپریشن کا فرمان جاری کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں : سعودی ولی عہد، اپنڈیکس کی کامیاب سرجری کے بعد شاہی محل روانہ

رپورٹ کے مطابق ہمارا جائزہ اس بنیاد پر ہے کیونکہ محمد بن سلمان نے 2017 میں ولی عہد بننے کے بعد سعودی بادشاہی کے تمام فیصلے اپنے ہاتھ میں لے لئے تھے۔

سعودی ولی عہد، جمال خاشقجی کو سعودی بادشاہت کے لئے براہ راست خطرہ سمجھتے تھے اور ان کو خاموش کرانے کے پرتشدد اقدامات کی حمایت کرتے تھے۔

امریکی رپورٹ میں مزید افراد کے نام بھی لیئے گئے ہیں۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ محمد بن سلمان کی ہدایت پر قتل کو انجام دینے والوں میں سعود القحطانی، ماہر مطرب، نائف العریفی، محمد الزہرانی، منصور ابا حسین، عبد العزیز الہوساوی، ولید عبد اللہ الشہیری، خالد العتیبہ، فہد شبیب البلوی، مشعل سعد البستانی، ترکی الشہیری، مصطفی المدنی، احمد زاید عسیری، عبد اللہ محمد الہرینی، یاسر خالد السالم، ابراہیم السلیم، صلاح الطبیعی اور محمد العتیبی کے نام لئے جا سکتے ہیں۔

متعلقہ خبریں