جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

شیری رحمان کا جاری صدراتی آرڈیننس پارلیمان میں پیش کرنے کا مطالبہ

آرڈیننس پارلیمان

کراچی : شیری رحمان کا کہنا ہے کہ پارلیمان کو مسلسل بائے پاس کیا، جاری آرڈیننس تاحال پارلیمان میں پیش نہیں کئے گئے۔

نائب صدر پیپلز پارٹی سینیٹر شیری رحمان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس حکومت نے ایوان صدر کو آرڈیننس فیکٹری بنا دیا ہے۔ ایچ ای سی، اسٹیٹ بینک اور دیگر اداروں متعلق آرڈیننس جاری کئے گئے ہیں۔ قومی اسمبلی کا اجلاس ایک ہفتے سے جاری ہے، آرڈیننس تاحال پارلیمان میں پیش نہیں کئے گئے۔

انہوں نے کہا کہ قانون کے مطابق آرڈیننس اسمبلی جلاس کے پہلے دن رکھنے چاہئے تھے۔ آئین کی خلاف ورزی کی جارہی ہے، ہمیں اس پر سخت تشویش ہے، حکومت کے غیر آئینی رویے کی مذمت کرتے ہیں۔ یکے بعد دیگرے آرڈیننس جاری کئے گئے ہیں، جن کا قوم کو نہیں پتہ۔

یہ بھی پڑھیں : صدارتی آرڈیننس : مہنگائی کا سیلاب آنے والا ہے، قوم تیاری کرلے : مریم اورنگزیب

ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے پارلیمان کو مسلسل بائے پاس کیا ہے۔ ایچ ای سی کی خودمختاری پر واضع حملہ کیا گیا ہے۔ آرڈیننس 120 کے لئے ہوتا ہے، یہ حکومت 120 دن کی توسیع پر چل رہی۔ اداروں کو تباہ کرکے پارلیمان کو اندھیرے میں رکھا گیا ہے۔

شیری رحمان نے کہا کہ ان کا نام ایڈہاک سرکار اور تباہی سرکار رکھا گیا ہے۔ انہوں نے ہر ادارے کو تباہ کر دیا ہے۔

متعلقہ خبریں