جی ٹی وی نیٹ ورک
اسلام آباد

کرم ایجنسی کے شیعہ سنی امن کیلئے ایک ہیں : رہنما ایم ڈبلیو ایم ناصر شیرازی

کرم ایجنسی کے شیعہ سنی

اسلام آباد : مرکزی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین ناصر شیرازی و دیگر کا اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کرم ایجنسی کے اہل تشیع اور اہل سنت امن کیلئے ایک ہیں۔

رہنما ایم ڈبلیو ایم کا پر یس کانفرنس میں کہنا تھا کہ کرم ایجنسی میں ایف سی آر کا قانون ختم کیا گیا لیکن پھر بھی امن برقرار نہیں ہوسکا،کرم ایجنسی کے تین حصے افغانستان کے ساتھ ملتے ہیں،سیکورٹی فورسز اور کرم کے لوگوں نے اس سرزمین میں باہر سے طالبانائزیشن کو آنے نہیں دیا۔

رہنما ایم ڈبلیو ایم نے کہا کہ کرم ایجنسی میں تین افراد کو پاراچنار کے قریب پلان کر کے قتل کیا گیا،جن افراد نے وہاں قتل کیا ان کو قانون کے مطابق سزا ہو نی چاہیے،قانون نافذ کرنے والے ادارے محرم سے پہلے کرم ایجنسی اور پارہ چنار کا امن بحال رکھنے میں کردار ادا کریں
۔
ناصر شیرازی نے مزید کہا کہ سلطان گل نامی شخص وہاں سے توہین اہلبیت کر رہا ہے لیکن اس پر ایکشن کیوں نہیں ہورہا ہے،توہین اہلیبت کرنے والوں کو قانون کے کٹہرے میں لاکر منطقی انجام تک پہنچایا جائے۔

کرم ایجنسی کے ساتھ ہم پوری قوم کھڑی ہے،ادارے پارا چنار اور کرم ایجنسی کے راستوں کو پرامن بنائیں،قبائلی زمینوں کو قانون کے مطابق حل کیا جائے،کرم ایجنسی کے لوگ کسی کو پاکستان کی سرزمین پر اثر انداز نہیں پونے دیں گے۔

ناصر شیرازی کا کہنا تھا کہ طالبان نے قبائلی علاقوں کو صوبے سے ختم کر کے دوبارہ قبائلی بنانے کی بات کی جسے ہم مسترد کرتے ہیں،اگر اس پر ابھی سے سوچا نہیں گیا تو طالبان پھر سے پاکستان میں دہشت گردی کریں گے،قاتلوں کے ساتھ مذاکرات نہیں ہوسکتے ہیں،حکومت کا طالبان جیسے قاتلوں کے ساتھ مذاکرات پر بھرپور احتجاج کریں گے۔

یہ پڑھیں  : وزیراعظم کو کوئٹہ جانا چاہیئے یہ انسانیت کا مسئلہ ہے: علامہ راجا ناصر عباس

متعلقہ خبریں