جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

سندھ حکومت لوگوں کو گٹر کا پانی پلارہی ہے : حلیم عادل شیخ

گٹر کا پانی

کراچی : حلیم عادل شیخ نے پنیاری نہر میں گٹر کا پانی چھوڑنے پر سندھ حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ نے عوامی شکایات پر پنیاری نہر کا دورہ کیا، جس میں انہوں نے گٹروں کا پانی براہ راست پنیاری نہر میں چھوڑے جانے پر شدید برہمی کا اظہار کیا۔

انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت سندھ کے لوگوں کو گٹر کا پانی پلارہی ہے، سندھ میں 85 لاکھ لوگ ہیپاٹائٹس کے مریض ہیں۔ بلاول زرداری اور مراد علی شاہ سندھ کے لوگوں کو سلو پوائزن دے رہے ہیں۔ سندھ حکومت کا ہوا پر بس نہیں چلتا ورنہ اس پر بھی قبضہ ہوجاتا۔

ان کا کہنا تھا کہ مرتضیٰ وہاب 6 سال ماحولیات کے وزیر رہے یہ ان کی ذمہ داری تھی۔ سکھر شہر کا سارا گندہ پانی دریائے سندھ میں جاتا ہے۔ شکارپور شہر کے گٹر کا پانی بغاری نہر میں جاتا ہے، جو لوگ پینے کے لیے استعمال کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : کراچی میں پولیس مقابلہ، لوٹ مار کرنے والے تین ملزمان گرفتار

حلیم عادل شیخ نے کہا کہ لاڑکانہ شہر کے گٹروں کا پانی رائیس کینال میں جاتا ہے۔ دادو اور قرب جوار کے گٹروں کا پانی ایم این وی ڈرین میں جاتا ہے۔ حیدرآباد اور آس پاس کے علاقوں کا گندہ پانی پھلیلی اکرم واہ پنیاری میں جاتا ہے۔

قائد حزب اختلاف سندھ نے کہا کہ حیدرآباد نوری آباد اور کوٹڑی کے صنعتی ایریاز کا زہریلا پانی اور فضلا براہ راست کے بی فیڈر میں داخل ہو رہا ہے۔ حیدرآباد کینجھر تباہ ہونے جارہی ہے، منچھر حمل مکمل تباہ ہوچکے ہیں۔ حیدرآباد سندھ میں بیٹھے حکمران وہ لوگ ہیں جنہوں نے سندھ کو تباہ کردیا ہے۔

متعلقہ خبریں