جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

پنجاب کا آئی جی تیس منٹ، سندھ کا آئی جی تیس دن میں بھی نہیں بدل رہا : سعید غنی

سعید غنی پنجاب کا آئی جی

کراچی : سعید غنی نے کہا ہے کہ پنجاب کا آئی جی تیس منٹ میں مگر سندھ کا آئی جی تیس دن میں بھی نہیں بدل رہا۔ سندھ کو دوسرے درجے کا شہری کہلانا بند کریں۔

صوبائی وزیر اطلاعات سعید غنی نے اقراء یونی ورسٹی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ آئی جی کے مسئلے پر 5 نام دئیے پھر ان پر بات ہوئی ان میں سے ایک نام پر وزیراعظم اور وزیر اعلیٰ دونوں نے اتفاق کیا۔

انہوں نے کہا کہ سندھ کے آئی جی کے لئے کابینہ میں بھی گئے۔ آئی جی کی تعیناتی میں گورنر سندھ کا کوئی کردار نہیں۔ ہم آئی جی کے معاملے پر گورنر سے مشاورت نہیں کریں گے، یہ غیر قانونی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : سندھ حکومت کلیم امام کی کارکردگی سے مطمئن نہیں : سعید غنی، مرتضیٰ وہاب

ان کا کہنا تھا کہ 27 دسمبر تک جو میٹنگ ہوئی، اس میں کوئی مسئلہ نہیں تھا۔ یہ سارا اٹھائیس دسمبر کو ہونے والی کابینہ میٹنگ کے بعد ہوا ہے۔ پنجاب کا آئی جی تیس منٹ میں مگر سندھ کا آئی جی تیس دن میں بھی نہیں بدل رہا۔ سندھ کو دوسرے درجے کا شہری کہلانا بند کریں۔

صوبائی وزیر اطلاعات نے کہا کہ پولیس کے محکمے میں تبادلے ہونے اور کسی کو صوبے سے باہر بھیجنے میں فرق ہے۔ آئی جی صاحب کی کٹیگری کے مطابق ڈی آئی جی اچھے آفیسر نہیں۔ آئی جی کا وزیراعظم سے ملنا کوئی بری بات نہیں۔ یہ الوداعیہ ہوسکتا ہے، شکریہ ادا کرنا ہوگا کہ آپ نے آئی جی لگوایا۔

سعید غنی نے کہا کہ وزیر اعظم کی کابینہ وزیر اعظم کو شرمندہ کرنا چاہتی ہے۔ ایک نام پر اتفاق ہوا تھا۔ مگر کابینہ شرمندہ کررہی ہے۔ یہ وہی ہیں، جو آئی جی کو اپنے مفاد کے لیے استعمال کرنا چاہتے ہیں۔

متعلقہ خبریں