جی ٹی وی نیٹ ورک
انٹرٹینمنٹ

سشانت سنگھ کو منصوبہ بندی سے قتل کیا گیا: کنگنا رناوت

سشانت

ممبئی: بھارتی فلم انڈسٹری میں اقرباء پروری پر آواز بلند کرنے والی نڈر اداکارہ کنگنا رناوت نے اداکار سشانت سنگھ راجپوت کی خود کشی کی وجہ فلم انڈسٹری کو قرار دے دیا۔

گزشتہ روز 34 سالہ اداکار سشانت سنگگ راجپوت نے مبینہ طور پر اپنے گھر میں پنکھے سے لٹک کر خود کشی کرلی تھی جب کہ ان کے حوالے سے کہا گیا کہ وہ ڈپریشن کا علاج کرارہے تھے۔

سشانت کی خودکشی کے حوالے سے اداکارہ کنگنا رناوت کا کہنا ہے کہ سشانت کی موت نے ہم سب کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا ہے، لیکن کچھ لوگ کہہ رہے ہیں کہ جن کا دماغ کمزور ہوتا ہے وہ ڈپریشن میں آکر خودکشی کرلیتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سشانت سنگھ پوزیشن ہولڈر تھے اور اسکالر شپ بھی لی تھی تو ان کا دماغ کیسے کمزور ہوسکتا ہے۔

کنگنا کا مزید کہنا تھا کہ سشانت اپنی آخری پوسٹوں اور انٹرویوز میں لوگوں کو کہہ رہے تھے کہ میری فلمیں دیکھو، میرا کوئی گاڈ فادر نہیں ہے، مجھے انڈسٹری سے نکال دیا جائے گا اور انڈسٹری مجھے اپنا ہی نہیں رہی۔

اداکارہ نے کہا کہ انڈسٹری کا رویہ کیا یہ اس حادثے کی بنیاد نہیں؟

انڈسٹری کے رویے پر کنگنا نے مزید کہا کہ آنجہانی اداکار کو ڈیبیو فلم پر بھی کوئی ایوارڈ نہیں دیا گیا، ’کیدرناتھ‘، ’دھونی‘ اور ’چھچھوڑے‘ جیسی فلموں پر بھی نہیں سراہا گیا بلکہ ’گلی بوائے‘ جیسی واہیات فلم کو سارے ایوارڈ مل جاتے ہیں لیکن ’چھچھوڑے‘ جیسی بہترین فلم کو کوئی ایوارڈ نہیں ملتا۔

خیال رہے کہ ’چھچھوڑے‘ فلم گزشتہ سال ریلیز ہوئی تھی جس میں سشانت سنگھ نے مرکزی کردار کیا تھا جبکہ ’گلی بوائے‘ بھی گزشتہ سال ہی نمائش کے لیے پیش کی گئی تھی جس میں رنویر سنگھ اور عالیہ بھٹ نے مرکزی کردار کیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ سشانت کی موت خودکشی نہیں بلکہ منصوبہ بندی سے کیا گیا قتل تھا جس میں سسشانت کی غلطی یہ تھی کہ وہ لوگوں کی باتوں میں آگیا اور لوگوں نے کہا کہ فلم انڈسٹری میں کام نہیں ملے گا تو وہ مان گیا۔

واضح رہے کہ سُشانت سنگھ نے ‘کائے پو چے’، ’ایم ایس دھونی’، ‘کیدارناتھ’ اور ‘رابطہ’ جیسی فلموں میں اداکاری کی۔

متعلقہ خبریں