جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

جس ملک کے حکمران پیسہ چوری کریں وہ ملک آگے نہیں بڑھ سکتا: وزیراعظم

ملک کے حکمران

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ آج کل ہر طرف ٹیپس نکل رہی ہیں، ججز کے نام آرہے ہیں، جس ملک کے حکمران پیسہ چوری کریں وہ ملک آگے نہیں بڑھ سکتا۔

کامیاب جوان کنونشن 2021 کی تقریب سے وزیر اعظم عمران خان کا خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کامیاب جوان پروگرام ہمارے منصوبوں میں سب سے زیادہ کامیاب ہوگا، 9 سال کا تھا تو اپنی والدہ کے ساتھ لاہور اسٹیڈیم میں ٹیسٹ میچ دیکھنے گیا تھا، اپنی والدہ کو کہا کہ میں ٹیسٹ کرکٹر بننا چاہتا ہوں، سب نے مجھے کہا کہ تم ٹیسٹ کرکٹر نہیں بن سکتے، میں نے محنت کی ،غلطیوں سے سیکھا اور اللہ نے مجھے کامیابی عطا کی۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ شوکت خانم بنانے لگا تو کہا گیا کہ اسپتال نہیں بن سکتا، سیاست میں آیا تو 14سال تک میرا مذاق اڑایا گیا، لوگ کہتے تھے 2 پارٹی سسٹم میں تیسری پارٹی نہیں آسکتی،

پھر جب میں اقتدار میں آگیا تو کہا گیا کہ کامیاب نہیں ہوسکتے، کوئی بھی انسان آج تک محنت کیے بغیر کامیاب نہیں ہوا، کوئی بھی انسان شارٹ کٹ کے ذریعے کامیاب نہیں ہوسکتا۔

ان کا کہنا تھا کہ بڑی سوچ رکھنے والا شخص ہی بڑا آدمی بن سکتا ہے، کامیاب وہ شخص ہوتا ہے جو بڑی سوچ اور بڑا خواب رکھتا ہے اور پھر ہار نہیں مانتا، اپنی غلطیوں سے سیکھ کر انسان اوپر چلا جاتا ہے، نوجوانوں کے ہاتھ میں اس ملک کا مستقبل ہے، انسان تب ہی کامیاب ہوتا ہے جب وہ برے وقت سے سیکھتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان سمیت پوری دنیا پر مشکل وقت آیا ہوا ہے، کورونا کی وجہ سے پوری دنیا پر مشکل وقت آیا ہوا ہے، گھر بنانے کیلئے حکومت سود کے بغیر قرضے دے گی، آج کل ہر طرف ٹیپس نکل رہی ہیں، ججز کے نام آرہے ہیں، جس ملک کے حکمران پیسہ چوری کریں وہ ملک آگے نہیں بڑھ سکتا۔

یہ بھی پڑھیں: ملک کو مقروض بنانے والوں کو سزائیں ہونی چاہئیں: وزیراعظم

عمران خان کا کہنا تھا کہ کرپشن کرنے والے یہ پیسہ باہر بھیج کر ملک کا دگنا نقصان کرتے ہیں، 2016میں پاناما کیس آیا اس میں نوازشریف کانام بھی آیا، پاناما لیکس پر عدالت میں کیس چلا اور سزا ہوئی، پاناما میں آف شور کمپینوں میں پیسہ چھپانے والوں کے نام آئے، پاناما میں آیا لندن کے 4 مہنگے فلیٹس کی مالکن مریم صفدر ہیں۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ لاہور میں فنکشن ہوتا ہے تو چیف جسٹس سپریم کورٹ کو بلایا جاتا ہے، فنکشن میں تقریر وہ کرتا ہے جو ملک سے جھوٹ بول کر بھاگا ہوا ہے،

جھوٹ بول کر ملک سے بھاگنے والا آج تقریریں کررہا ہے، ہر چیز کا جواب دے رہے ہیں، فلیٹس کا نہیں، لندن فلیٹس سے متعلق پوچھا گیا تو عدلیہ کو نشانہ بنایا گیا۔

انہوں نے کہا کہ جب ایک قوم کی اخلاقایات ختم ہوتی ہے تو وہ تباہ ہوجاتی ہے، مدینہ کی ریاست کی بنیاد اخلاقیات پر رکھی گئی تھی۔

متعلقہ خبریں