جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

کسٹم نے 3 ارب روپے مالیت کی منشیات تلف کردی

کراچی: کسٹم ایف بی آر کے تحت ضبط کی گئیں ساڑھے 3ارب روپے مالیت کی 10ہزارٹن سے زائدمنشیات تلف کردی گئیں۔ ممبرکسٹم ایف بی آر جواد آغا کہتے ہیں کہ 41کروڑ روپے کے مساوی اسمگل شدہ غیرملکی کرنسی کوبھی اسٹیٹ بینک میں جمع کرایا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں سپرہائیوے سے متصل رینجرزشوٹنگ کلب میں منشیات کوتلف کرنے کی تقریب منعقد ہوئی۔ تقریب سے خطاب اورمیڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے ممبرکسٹم ایف بی آر جواد آغا نے بتایا کہ ساڑھے 3ارب روپے مالیت کی 10ہزارٹن سے زائد منشیات جس میں 600ٹن چھالیہ،60ہزار شراب کی بوتلیں، نشہ آورادویات ،2ٹن گُٹکا،11لاکھ سگریٹ کے ڈنڈے 21عشاریہ 7ٹن ایسیٹک ہائیڈرائیڈ تلف اوردیگرممنوعہ اشیاء کوتلف کیا گیا۔

انہوں نے بتایاکہ پاکستان کسٹمز کی انسداد اسمگلنگ کی سرگرمیاں بڑھ گئی ہیں جس کے سبب سال میں تین بارضبط شدہ اشیاء کی بڑے پیمانے پرتلفیاں کی جارہی ہیں۔

آغا جواد نے بتایا کہ کسٹمز نے رواں مالی سال جولائی تا مارچ کے دوران گذشتہ سال کے مقابلے میں 35 فیصد کے اضافے سے ساڑھے 23ارب روپے کی اسمگل شدہ اشیاء ضبط کیں۔

ممبر کسٹم کا کہنا تھا کہ رواں سال 41 کروڑ روپے کے مساوی اسمگل شدہ غیرملکی کرنسی کواسٹیٹ بینک میں جمع کروائی گئیں۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ کسٹمزتلفی سے قبل ضبط شدہ اشیاء کی تمام انوینٹریز کا آڈٹ اور لیب ٹیسٹنگ کرواتا ہے۔

انکا کہنا تھا کہ کسٹمزانٹیلیجنس میں ضبط شدہ اشیاء کی تلفی سے قبل تبدیلی کے خلاف تحقیقات جاری ہیں جس میں متعلقہ عملے کومعطل کرکے تمام ضبط شدہ اشیاء کاآڈٹ بھی کرایا جارہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کسٹمز ضبط شدہ اشیاء میں کرپشن میں ملوث کسی بھی کسٹمز اہلکار کو نہیں بخشے گا۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کی توجہ کرنسی اسمگلنگ حوالہ ہنڈی اورمنی لانڈرنگ پرمرکوز ہے۔

متعلقہ خبریں