جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

قوم وزیر اعظم سے پریشان ہے، نااہل حکومت نے عوام کو بھنور میں دھکیل دیا : مرتضیٰ وہاب

قوم وزیر اعظم سے

کراچی : ترجمان سندھ حکومت کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم صاحب سب بہتر نہیں ہے، آپ کی نااہل حکومت نے عوام کو بھنور میں دھکیل دیا، زرعی ملک گندم، چینی اور کپاس امپورٹ کررہا ہے، پوری قوم اس وزیر اعظم سے پریشان ہے۔

سندھ حکومت کے ترجمان مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت میں صرف ایک شخص وزیر اعظم کے فوٹو گرافر نے تین سال میں سب سے زیادہ ذمہ داری سے کام کیا۔ حکومت کی کارکردگی کو فوٹو گرافرز نے اجاگر کرنے کی کوشش کی۔ وزیراعظم اکیلے گاڑی چلارہے تھے مگر ویڈیو بنانے والا موجود تھا، بالاخر اب ہیلی کاپٹر کے بجائے وزیراعظم روڈ پر آگئے۔

انہوں نے کہا کہ ان کی ویڈیو اور تصاویر میں کوئی خریدار نظر نہیں آیا۔ اس کی دو وجوہات ہوسکتی ہیں۔ ایک تو یہ کہ مہنگائی بہت ہے اور لوگ خریداری نہیں کرسکتے یا دوسری وجہ یہ کہ کسی کو آنے نہ دیا گیا ہو۔

ان کا کہنا تھا کہ ترجمانوں نے وزیراعظم کے پہلی بار بازار میں آنے پر بڑے شادیانے بجائے۔ اشیاء کی قیمتیں آسمان کو چھو رہی ہیں،

عام آدمی کی قوت خرید ختم ہوچکی۔ شاید وزیراعظم کا احساس تصاویر اور ویڈیوز کی حد تک ہے۔

ترجمان سندھ حکومت نے کہا کہ میرے کپتان مہنگائی کی شرح 11 اعشاریہ ایک فیصد ہوچکی ہے۔ مہنگائی ڈبل ڈجٹ میں آچکی ہے۔ کھانے پینے کی اشیا کی قیمتوں میں پندرہ فیصد تک اضافہ ہوا ہے۔ بجلی کی قیمتوں میں 29 فیصد اضافہ ہوا۔ ورلڈکپ جتوانے والے کپتان کی کارکردگی یہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں : عمران خان، آلو، پیاز کی قیمتیں تو سنبھال نہیں پارہے، ملک کیا چلائیں گے؟ بلاول بھٹو

مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہ پوری قوم اس وزیر اعظم سے پریشان ہے۔ گزشتہ ایک سال میں گندم میں 19 فیصد، مرغی 85، دودھ 13 اور ٹماٹر میں 60 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے امپورٹ کو ڈبل اور ایکسپورٹ کو کم کردیا ہے۔ زرعی ملک گندم، چینی اور کپاس امپورٹ کررہا ہے۔

صوبائی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ شوکت ترین نے درست کہا کہ بجلی کی قیمتوں میں اضافے کا فیصلہ غلط تھا۔ انہیں ابھی مزید بجلی کے نرخوں میں اضافہ کرنا ہے۔

خان صاحب پاکستان کی عوام کو رلا رہے ہیں۔ پونے تین سال میں ملک کے قرضوں میں 12.4 کھرب سے زائد کا اضافہ ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اسٹاک ایکسیچنج کی انڈکس میں گزشتہ پانچ ماہ میں پانچ فیصد کمی ہوئی ہے۔ سرمایہ داروں کا حکومت پر اعتماد ختم ہوتا جارہا ہے۔ وزیر اعظم صاحب سب بہتر نہیں ہے۔ آپ کی نااہل حکومت نے عوام کو بھنور میں دھکیل دیا ہے۔

مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی حکومت نے گردشی قرضوں کو ایک کھرب سے بڑھا کر دو کھرب تک پہنچادیا۔ ایک سال میں 58 فیصد امپورٹس میں اضافہ ہوا۔ بجلی گیس پیٹرول کی قیمت میں اضافہ ہوگا، تو لاگت بڑھے گی۔ ان کی حکومت میں سیاسی استحکام ہوا نہ معاشی استحکام ہوا۔

متعلقہ خبریں