جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

پی آئی اے انتظامیہ کی غیر ذمہ داری، سہولیات کا فقدان، فضائی میزبان قرنطینہ ہوٹل میں بے یار و مددگار

بے یار و مددگار

کراچی : انڈونیشیا سے پاکستانیوں کو واپس لانے والے  پی آئی اے کے فضائی میزبان خود بے یار و مددگار ہوگئے ہیں۔

فضائی میزبانوں کو پرواز آپریٹ کرنے کے بعد 3 روز کیلئے ایئرپورٹ ہوٹل منتقل کیا گیا تھا۔ فضائی میزبانوں کے لئے قرنطینہ ہوٹل میں رہنا وبال جان بن گیا ہے۔

پی آئی اے کے فضائی میزبان جلدی امراض میں مبتلا ہونے لگے ہیں۔ فضائی میزبانوں کے لئے مختص ہوٹل میں کورونا وباء کی احتیاطی تدابیر نظرانداز کرتے ہوئے 20 سے زائد فضائی میزبانوں کو ہوٹل ایئرپورٹ میں نہ سینیٹائزر دیا گیا نہ ہی اسپرے کیا گیا۔ ہوٹل کے واش رومز میں نہ صابن، ہینڈ واش اور پانی بھی دستیاب نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں : پی آئی اے کا بیرون ملک میں پھنسے 1800 سے زائد پاکستانیوں کو وطن واپس لانے کے لیئے پلان تیار

ہوٹل میں قیام کرنے والے فضائی میزبانوں کو بے یار و مددگار چھوڑ دیا گیا ہے۔ فضائی میزبانوں نے سہولیات کے فقدان پر شعبہ فلائٹ سروسز حکام کو فیڈ بیک جاری کردیا ہے۔

متاثرہ کریو کا کہنا ہے کہ ہوٹل ایئرپورٹ میں کوئی سہولت فراہم نہیں کی جارہی ہیں۔ خواتین کیبن کریو ہوٹل میں جلدی امراض میں مبتلا ہورہی ہیں۔ فرنٹ آفس اور دیگر افسران کو شکایات کے باوجود سہولیات فراہم نہیں کی گئیں۔

متعلقہ خبریں