جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبریں

سندھ اسمبلی نے 17 سو 13 ارب روپے سے زائد کے بجٹ کی منظوری دے دی

17 سو 13 ارب

کراچی : سندھ اسمبلی کے اجلاس میں آئندہ مالی سال کا 17 سو 13 ارب روپے سے زائد کا بجٹ منظور کرلیا گیا، اپوزیشن کی کٹوتی کی تمام تحاریک مسترد کردی گئیں۔

بجٹ بحث کے آخری روز شرجیل انعام میمن، ناصر حسین شاہ اور سعید غنی سمیت دیگر وزراء نے تحریک انصاف کی قیادت کو خوب آڑے ہاتھوں لیا۔

قائد حزب اختلاف حلیم عادل شیخ اپنے طویل خطاب کے بعد ایوان سے روانہ ہوگئے۔ ایم کیو ایم کے خواجہ اظہار نے صوبائی حکومت پر شدید تنقید کی اور شکوں و شکایت کے ڈھیر لگا دیئے۔

یہ بھی پڑھیں : گلگت بلتستان کابینہ نے ایک کھرب 19 ارب روپے سے زائد کا بجٹ منظور کرلیا

وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ اپوزیشن لیڈر کو اسی طرح ہمیں بھی سننا چاہیئے تھا۔ تحریک انصاف نے اپنے دور میں ملک کو تباہ کیا۔

آئندہ مالی سال 23-2022 کے 246 مطالبات ایوان میں پیش کیئے گئے۔ 17 سو 13 ارب سے زائد کا بجٹ ایوان نے منظور کر لیا۔ اپوزیشن ارکان کی کٹوتی کی تحاریک ارکان کی عدم موجودگی کے باعث مسترد کردی گئی۔

سندھ اسمبلی کا اجلاس یکم جولائی دوپہر ڈھائی بجے تک ملتوی کردیا گیا۔

متعلقہ خبریں