جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

سندھ حکومت اسٹیل مل کے آکسیجن پلانٹ پر ایک ارب روپے خرچ کرنے کو تیار

ایک ارب روپے خرچ

کراچی : مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ اسٹیل مل کا آکسیجن پلانٹ تین ماہ میں تیار ہوسکتا ہے، جس ایک ارب روپے کی لاگت آئے گی، سندھ حکومت ایک ارب روپے خرچ کرنے کیلئے تیار ہیں۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے صوبے کے اہم ڈاکٹرز سے ملاقات کی۔ ملاقات میں وزیر صحت، وزیر بلدیات، مشیر قانون، چیف سیکریٹری، سیکریٹری صحت، ڈاکٹر باری، ڈاکٹر فیصل، وائس چانسلر ڈاکٹر سعید قریشی، ای ڈی جے پی ایم سی ڈاکٹر سیمی جمالی، ڈاکٹر نصرت شاہ، ڈاکٹر قیصر سجاد، ڈاکٹر غفار شورو، ڈاکٹر شریف ہاشمی، ڈاکٹر قاضی واصف، ڈاکٹر انوپ، ڈاکٹر شبیر اور دیگر شریک ہوئے۔

اس موقع پر وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ ڈاکٹرز سے ملاقات کا مقصد کورونا وائرس کی صورتحال کا جائزہ لینے اور کنٹرول کرنا ہے۔ آپ تمام ڈاکٹرز کی رہنمائی اور معاونت کی ضرورت ہے۔ انہوں نے محکمہ صحت کو ہدایت کی کہ پرائیویٹ اسپتالوں کو کولڈ چین اور ویکسین دی جائے۔

یہ بھی پڑھیں : اسٹیل ملز کو چلانے کیلئے پاکستان اسٹیل ملز سبسڈری کمپنی قائم کرنے کا فیصلہ

مراد علی شاہ نے کہا کہ چاہتا ہوں صوبے کے ہر شہری کو ویکسین لگے۔ ہمیں اپنے شہریوں کو کورونا وائرس سے محفوظ بنانا ہے۔ کراچی میں 12.87 فیصد، حیدرآباد 18.02 فیصد، سکھر 6.85 فیصد کورونا کے کیسز ہوگئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ صورتحال انتہائی خطرناک ہے۔ ہمیں ہر حال میں رضاکارانہ طور پر ایک دوسرے کا خیال رکھنا ہے۔ ہم کراچی شرقی، جنوبی اور حیدرآباد میں سخت اقدامات کررہے ہیں۔ سندھ کے داخلی راستوں پر صوبے میں اندر آنے پر سختی کی جائے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارے اسپتالوں میں آکسیجن کا مکمل انتظام ہونا چاہیئے۔ اگر مریض کو آکسیجن بر وقت لگ جائے تو وینٹی لیٹرز پر جانے کی ضرورت کم ہوجائے گی۔

آکسیجن کی ضرورت ہوگی، ہمیں بھرپور تیاری کرنی ہے۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ اسٹیل مل کا آکسیجن پلانٹ تین ماہ میں تیار ہوسکتا ہے۔ اس پلان کو کارآمد بنانے کیلئے ایک ارب روپے کی لاگت آئے گی۔ سندھ حکومت پلانٹ کا جائزہ لے کر چلائے گی۔ ہم ایک ارب روپے خرچ کرنے کیلئے تیار ہیں۔ میں اولڈ ایج ہومز میں کورونا وائرس ویکسین کرواؤں گا۔

متعلقہ خبریں