جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

ناروے میں کورونا کاعلاج ڈھونڈنے کیلئے پینتالیس سے زائد ممالک کا ٹرائل

پینتالیس سے زائد ممالک

دنیا بھرمیں تباہی مچانے والے کورونا وائرس کی ویکیسن کی تیاری کے لیے تجربات کا سلسلہ جاری ہے۔ ناروے میں کورونا کاعلاج ڈھونڈنے کیلئے پینتالیس سے زائد ممالک کثیرالملکی ٹرائل میں شرکت کررہے ہیں۔

مہلک وبا کاعلاج ڈھونڈنے کےلیے دنیا بھرمیں سائنسدان سرجوڑ کر بیٹھ گئے۔ عالمی ادارہ صحت کے تحت مہلک وائرس کا علاج ڈھونڈنے کے لیے پینتالیس سے زائد ممالک ایک کثیرالملکی ٹرائل میں شرکت کررہے ہیں۔

رپورٹس کے مطابق کورونا وائرس کا علاج ڈھونڈنے کےلیے لائسنس یافتہ اور 2 بیماریوں کے لیے استعمال کی جانے والی 4 دواؤں کو ملا کر اس کی مریضوں پر آزمائش کی جائے گی۔

رو س نے بھی کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے والوں کے خون سے پلازمہ لے کر دوا کی تیاری شروع کردی ہے۔ روسی سائنسدان کا کہنا ہے کہ علاج کے لیے کورونا وائرس سے صحتیاب افراد کے خون کے 500 ملی لیٹر پلازمہ کی ضرورت ہوگی, دوا صحت یاب افراد کے خون کے پلازمہ سے اینٹی وائرل امیونوگلوبلین حاصل کرکے تیار کی جائے گی۔

امریکا میں بھی ایک رضا کار کو تجرباتی طور پر کورونا وائرس کی ویکسین دی جاچکی ہے. آسٹریلیا اور اسرائیل کے ماہرین نے بھی دعوٰی کیا ہے کہ وہ کورونا وائرس کی ویکسین تیار کرنے کے قریب ہیں۔

برطانوی سائنسدانوں نے کورونا وائرس سے بچاؤ کی ویکسین کا تجربہ چوہوں پر کیا ہے, جس کے نتائج آئندہ چند ہفتوں میں سامنے آنے کا امکان ہے۔ امپیریل کالج لندن کے ماہرین کے مطابق سال کے آخر تک کورونا وائرس کی قابل اثر ویکسین تیار ہوسکتی ہے.

متعلقہ خبریں