جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

آپ کا دکھ ہمارا دکھ، آپ کی خوشی ہماری خوشی ہے : رجب طیب اردوان

رجب طیب اردوان

اسلام آباد : ترکی کے صدر رجب طیب اردوان نے کہا ہے کہ پاکستان اور ترکی کے تعلقات قابل رشک ہیں، ہمارے لیے کشمیر کی حیثیت وہی ہے جو آپ کے لیے ہے، پاکستان کا دکھ اور درد ہمارا دکھ اور درد ہے، پاکستان کی خوشی ہماری خوشی ہے۔

اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر اور چیئرمین سینیٹ صادق کی زیرِ صدارت پارلیمنٹ مشترکہ کا اجلاس ہوا، جس سے  ترک صدر نے خطاب کیا۔

مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ترک صدر رجب طیب اردوان پاکستانی عوام کو سلام پیش اور کہا کہ آپ سے مخاطب ہونا مسرت اور دلی خوشی کا باعث ہے، موقع فراہم کرنے پر میں علیحدہ علیحدہ آپ سب کا شکر گزار ہوں۔

ترکی کے صدر نے کہا کہ پاکستان آمد پر اپنے والہانہ استقبال پر پاکستانی قوم اور اعلیٰ حکام کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ میں پاکستان میں کبھی بھی اپنے آپ کو اجنبی ملک میں محسوس نہیں کرتا ہوں۔

یہ بھی پڑھیں : پاکستان کے ایوانوں سے کس کس غیر ملکی شخصیات نے خطاب کیا، تفصیل سے جانئے

تاریخ کا حوالہ دیتے ہوئے رجب طیب اردوان نے کہا کہ پاکستان اور ترکی کے تعلقات قابل رشک ہیں، سلطنت مغلیہ کے بانی ظہیر الدین بابر نے موجودہ پاکستان سمیت تمام خطے پر تقریباً 350 سال حکومت قائم رکھی اور ہماری مشترکہ تاریخ پر ان مٹ نقوش چھوڑے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ 1915 میں جب ترک فوج چناق قلعے کا دفاع کررہی تھی تو اس محاذ سے

6 ہزار کلو میٹر دور اِس سرزمین پر ہونے والے مظاہرے اور ریلیاں ہماری تاریخ کے ناقابل فراموش صفحات پر درج ہوچکے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ لاہور میں ہونے والے ان تاریخی جلسوں کا مرکز نگاہ چناق قلعے ہی تھا، ان جلسوں کا انتظام کرنے والے منتظمین دراصل چناق قلعے میں برسرپیکار ترک فوجیوں اور ترک قوم کی امداد کا مقصد لیے ہوئے تھے۔

رجب طیب اردوان نے کہا کہ اس روز لاہور کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے شاعر اعظم علامہ محمد اقبال نے بھی خطاب کیا تھا اور چند روز پہلے دیکھے گئے خواب کو اپنی شاعری میں بیان کیا تھا۔

ترک صدر کا کہنا تھا کہ پاکستان کے عوام نے اپنا پیٹ کاٹ کر جس طرح ضرورت کے وقت ترکی کی مدد کی ہم اسے کبھی فراموش نہیں کرسکتے نہ کریں گے اور ہمارے لیے اس وقت کشمیر کی حیثیت وہی ہے جو آپ کے لیے ہے۔

رجب طیب اردوان نے کہا کہ ترکی اور پاکستان کے تعلقات ایسے ہیں جو شاید ہی دنیا میں کسی ممالک کے درمیان دیکھنا ممکن ہوں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کا دکھ اور درد ہمارا دکھ اور درد ہے، پاکستان کی خوشی ہماری خوشی، اس کی کامیابی و کامرانی ہماری کامیابی اور کامرانی ہے اور اس سوچ کے ساتھ ہم حالیہ کچھ عرصے میں پاکستان میں آنے والی قدرتی آفات، سیلاب اور زلزلے کی تباہ کاریوں کے موقع پر اپنے بھائیوں کی مدد کے لیے دوڑے۔

ترک صدر نے کہا کہ پاکستانی بھائیوں کی جانب سے ترکوں کی دوستی پر پختہ یقین رکھنے کا طلبگار ہوں، ماضی کی طرح مستقبل میں بھی ہم پاکستان کا بھرپور ساتھ دینے کا سلسلہ جاری رکھیں گے۔

رجب طیب اردوان نے کہا کہ اس دائرہ کار میں موجودہ دور کے اہم موضوع فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے اجلاسوں میں پاکستان پر ڈالے جانے والے سیاسی دباؤ کے باوجود ہم پاکستان کی بھرپور حمایت کا پختہ یقین دلاتے ہیں۔

متعلقہ خبریں