جی ٹی وی نیٹ ورک
کاروباری خبریں

یو این ڈی پی اور پلاننگ کمیشن کی سرمایہ کاری اور پائیدار توانائی پر رپورٹ جاری

یو این ڈی پی

اسلام آباد : یو این ڈی پی اور پلاننگ کمیشن نے توانائی میں سرمایہ کاری اور پائیدار توانائی کے حوالے سے رپورٹ جاری کردی۔

یو این ڈی پی اور پلاننگ کمیشن نے توانائی میں سرمایہ کاری اور پائیدار توانائی سب کیلئے کے حوالے سے رپورٹ جاری کردی۔

رپورٹ میں واضح کیا گیا کہ پاکستان میں 2030 تک پاور سیکٹر میں 66 اعشاریہ 56 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کی گنجائش ہے۔ ملک بھر میں 73 فیصد لوگوں تک بجلی کی رسائی ہے۔

ملک میں بتیس ہزار دو سو چھبیس دیہاتوں میں بجلی نہیں ہے۔گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر 90 فیصد آبادی بجلی سے مستفید ہو رہی ہے۔ ملک میں 75 فیصد آبادی گیس سے محروم ہے۔

رپورٹ کے مطابق ملک کی 60 اعشاریہ 6 فیصد آبادی کھانا پکانے کیلئے لکڑیوں کا استعمال کرتی ہے۔ ملک میں متبادل ذرائع سے 1200 میگاواٹ بجلی حاصل کی جارہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: دہشت گردوں کی مالی معاونت کے خاتمے سے پاکستان کو فائدہ ہوگا : رضا باقر

2030 تک انرجی مکسڈ میں متبادل توانائی کا حصہ 24 فیصد تک پہنچ جائیگا۔ملک میں ٹیکنکل اور کمرشل لاسز کی وجہ سے گردشی قرضہ بڑھ رہا ہے۔

ملک بھر میں ٹیکنکل اور ڈسٹریبیوشن لاسز ریجن میں سب سے زیادہ ہیں۔ بجلی تقسیم کار کمپنیوں کے لاسز 20 فیصد تک ہیں۔

کچھ بجلی تقسیم کار کمپنیوں کے لاسز 38 فیصد سے بھی زائد ہیں۔ ایس ایس جی پی ایل اور ایس این جی پی ایل کے لاسز 11 اعشاریہ 5 فیصد سے لیکر 15 تک ہیں۔

رپورٹ میں واضح کیا گیا کہ دونوں گیس کمپنیاں لاسز پر قابو پاکر سالانہ 140 ارب روپے بچا سکتی ہیں۔

متعلقہ خبریں