جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

امریکی کانگریس میں ٹرمپ کو عہدے سے ہٹانے کی قرارداد منظور

عہدے سے ہٹانے

واشنگٹن : کانگریس نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو آئین کی 25 ویں ترمیم کے تحت عہدے سے ہٹانے کے لیے قرارداد منظور کرلی ہے۔

امریکی ایوان نمائندگان (کانگریس) نے 25ویں ترمیم بحال کرکے ڈونلڈ ٹرمپ کو صدر کے عہدے سے ہٹانے کی قرارداد منظور کرلی ہے۔ قرارداد کی حمایت میں 223 اور مخالفت میں 205 ووٹ ڈالے گئے۔

قرارداد میں نائب صدر کو کہا گیا ہے کہ وہ آئین کی 25ویں ترمیم کے تحت ڈونلڈ ٹرمپ کو صدارت کے عہدے سے برطرف کر دیں۔

ادھر نائب صدر مائیک پینس نے ٹرمپ کو ہٹانے کی حمایت سے انکار کردیا ہے۔ کانگریس میں اس حوالے سے پیش کی گئی قرارداد کی منظوری سے چند گھنٹوں قبل اسپیکر نینسی پلوسی کو لکھے گئے خط میں مائیک پینس نے کہا کہ ٹرمپ کی صدارتی مدت کے اختتام میں صرف 8 دن باقی ہیں، ایسے وقت میں اس طرح کی کارروائی کسی طرح ہمارے قومی مفاد اور آئین سے ہم آہنگ نہیں۔

یہ بھی پڑھیں : ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مواخذے کی تیاریاں، اپنے بھی ساتھ چھوڑنے لگے، دارالحکومت میں سیکورٹی سخت

ان کا کہنا تھا کہ امریکی صدر کو 25ویں آئینی ترمیم سے ہٹانے سے غلط روایات جنم لیں گی۔ اس طرح کا عمل ہماری قوم کے مفاد میں نہیں۔ تمام ایوان نمائندگان سیاسی درجہ حرارت کو کم کریں۔

امریکی آئین کی 25 ویں ترمیم کے تحت اگر صدر ملکت کسی وجہ سے اپنی ذمہ داریاں ادا کرنے کے قابل نہ ہوں تو نائب صدر سمیت کابینہ اکثریت کے تحت صدر کو ہٹانے کا اختیار رکھتی ہے اور اس کے بعد نائب صدر ملک کے صدر کی حیثیت سے اپنی آئینی مدت پوری کریں گے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا ہے کہ مواخذے کی تحریک پر امریکی عوام میں غصہ پایا جاتا ہے۔ میرے خلاف مواخذے کی تحریک انتہائی فضول بات ہے۔

متعلقہ خبریں