پاکستان اور بھارت کو کشمیر پر پیشرفت کرنا ہوگی : امریکہ

واشنگٹن : امریکہ نے کشمیر میں لائن آف کنٹرول پر تازہ گولہ باری اور کشیدگی کو باعث تشویش قرار دیا ہے۔

غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق محکمہ خارجہ کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکہ کی پالیسی ہے کہ مسئلہ کشمیر پر بھارت اور پاکستان باہمی مذاکرات تیز کریں، دونوں ممالک ایک دوسرے کی خود مختاری کا احترام کرتے ہوئے دخل اندازی سے گریز کریں۔

امریکہ نے واضح کیا ہے کہ کشمیر کے حوالے سے امریکہ کی پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے اور دونوں ممالک کی حکومتوں کو کشمیر کے معاملے پر باہمی مذاکرات میں پیش رفت کرنا ہو گی۔ کشمیر میں لائن آف کنٹرول پر تازہ گولہ باری باعث تشویش ہے اور اس صورت حال کو قابو میں کرنا ہو گا۔

بیان میں زور دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کو مسئلہ کشمیر کے معاملے پر پیشرفت کرنا ہو گی، کیونکہ یہ مسئلہ برصغیر کے امن کو یرغمال بنائے ہوئے ہے ۔ برصغیر کے حالات پر کڑی نگاہ رکھے ہوئے ہیں، تاہم مداخلت کے متحمل نہیں ہو سکتے ہیں۔