جی ٹی وی نیٹ ورک
اہم خبریں

امریکہ ایرانی تیل کی درآمد بند کرنے کے لیے چین پر دباؤ ڈالے گا : رپورٹ

ایرانی تیل کی

بائیڈن انتظامیہ کے اعلیٰ ایرانی ایلچی نے کہا کہ وہ چین پر ایرانی تیل کی درآمد بند کرنے کے لیے دباؤ بڑھائے گا۔

ایران کے لیے امریکہ کے خصوصی ایلچی رابرٹ میلے نے بلومبرگ کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ایران کی غیر قانونی برآمدات کی اصل منزل چین ہے اور بیجنگ کو خریداری سے باز رکھنے کے لیے بات چیت تیز ہونے جا رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکہ ایرانی تیل کی برآمد کو روکنے کے لیے ایسے اقدامات کرے گا، جس کی ضرورت ہے۔ ہم نے ایران کے خلاف اور خاص طور پر ایرانی تیل کی درآمد کے حوالے سے اپنی پابندیوں میں کوئی کمی نہیں کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : ایران کے سابق نائب وزیر دفاع کو پھانسی دے دی گئی

امریکہ نے اسلامی جمہوریہ ایران اور اس کی پیٹرولیم برآمدات پر 2018 میں اس کے جوہری پروگرام پر مشتمل ایک معاہدے سے دستبرداری کے بعد دوبارہ پابندیاں عائد کردی تھیں۔ اس کے جواب میں تہران نے یورینیم کی افزودگی کی سرگرمیاں تیز کر دی ہیں اور بین الاقوامی نگرانی کو محدود کر دیا ہے۔

دریں اثنا، حالیہ مہینوں میں ایران کے خام تیل کی ترسیل میں اضافہ ہوا ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ تیل کے اس سیلاب کا زیادہ تر حصہ چین کی طرف جا رہا ہے، جو دنیا کا سب سے بڑا درآمد کنندہ ہے۔

متعلقہ خبریں