جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

اپوزیشن بل کو پڑھنا چاہتے ہیں تو پڑھیں ہمیں اعتراض نہیں: وزیر خارجہ

اعتراض

اسلام آباد: شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ بل کو پڑھنا چاہتے ہیں بے شک پڑھیں ہم نے کب اعتراض کیا، جمہوریت میں فیصلہ اکثریت کی بنیاد پر ہوتا ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہم پارلیمان میں عوامی مفاد میں قانون سازی کرنا چاہتے ہیں، عوام کو ریلیف دینا چاہتے ہیں تو اس میں رخنہ نہ ڈالیں، اگر کسی قانون پر اعتراض ہے تو اس میں ترمیم لائیں۔

یہ بھی پڑھیں: حکومت کو ہمارے ساتھ بیٹھ کر فیصلہ کرنا پڑے گا، زبردستی یہ بل پاس نہیں ہوگا: بلاول

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ جمہوریت میں اکثریت کی بات کو فوقیت دی جاتی ہے، ایوان میں ارکان کو بل پر بحث کا موقع دینا چاہیے، بل کو پڑھنا چاہتے ہیں بے شک پڑھیں ہم نے کب اعتراض کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ جمہوریت میں فیصلہ اکثریت کی بنیاد پر ہوتا ہے، امریکا اور بھارت میں بھی انتخابات میں الیکٹرانک مشینیں استعمال ہوتی ہیں، الیکٹورل ریفارمز پر اپوزیشن کو کئی مرتبہ دعوت دی۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ کلبھوشن کے معاملے پر اپوزیشن بھارت کی بولی بول رہی ہے، کلبھوشن یادیو کی کہانی ہم نے نہیں تم نے بگاڑی، ایک وہ طبقہ ہے جو پیسا لوٹ کر باہر منتقل کرتا ہے، دوسرے بیرون ملک مقیم پاکستانی ہیں جو باہر سے پیسا پاکستان لاتے ہیں، بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینا چاہتے ہیں۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ آپ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں سے ان کا حق چھیننا چاہتے ہیں، ہم بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو حق دے رہے یہ لوگ چھین رہے ہیں، جمہوریت میں اکثریت کی بات کو فوقیت دی جاتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ انتخابی اصلاحات پر آپ نے کہا بات چیت ہونی چاہیے، آپ لوگ جمہوریت کی نفی کررہے ہیں، الیکٹرونک ووٹنگ بھارت اور امریکا میں کئی سال سے رائج ہے۔

متعلقہ خبریں