واٹر ٹریٹمنٹ پروجیکٹس آئندہ سال بھی مکمل نہ ہوسکے

اسلام آباد: واٹر ٹریٹمنٹ پروجیکٹس گوادر اور کراچی میں آئندہ سال میں بھی مکمل نہیں ہوسکیں گے۔

سی پیک کے تحت واٹر ٹریٹمنٹ کے آئندہ بجٹ میں وفاقی حکومت نے ان منصوبوں کے لیے مطلوبہ مقدار میں فنڈز مختص نہیں کیے۔ جبکہ منگل کو سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے فنانس اور ریونیو نے وزارت خزانہ اور فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے لیے 30 ارب روپے مختص کرنے کی منظوری دے دی تاہم اس دوران انفرادی منصوبوں کی اسکروٹنی نہیں کی گئی۔

خیبرپختونخوا اور پنجاب میں جاری منصوبوں کے لیے زیادہ رقم رکھی گئی ہے جبکہ سندھ اور بلوچستان کے منصوبوں کو پورے فنڈز نہیں ملیں گے۔