ہزارہ برادری پر ظلم ہوا ہے، ملوث عناصر کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے: شہریار آفریدی

کوئٹہ : وفاقی وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے کہا ہے کہ دشمن پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرکے بکھیرنا چاہتے ہیں، دشمن کے سامنے ڈٹ جانا فلسفہ حسینی ہے، ہماری نیت پر شک نہ کریں، بلوچستان کے ہر باسی کو ریاست عزت دے گی۔

وفاقی وزیر مملکت نے ہزار گنجی خود کش دھماکے کے خلاف چار روز سے جاری ہزارہ برادری کے دھرنے میں شرکت کی۔

دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کی جانب سے شہداء کے لواحقین سے اظہار تعزیت کرتا ہوں، افسوس ناک واقعے میں شہید ہونے والوں کے غم میں برابر کے شریک ہیں، دشمن پاکستان کو بلیک لسٹ میں لانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ دشمن پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرکے بکھیرنا چاہتے ہیں، ایسے واقعات کی کوئی وضاحت نہیں، ایسا نہیں ہونا چاہیے، دہشتگردی کے خلاف ہمارے عوام اور فورسز نے بے شمار قربانیاں دیں۔

شہریار آفریدی نے کہا کہ غیروں کے ایجنڈے پر زبان قومیت کی بنیاد تفریق پیدا کی گئیں، اتفاق اور یکجہتی سے پاکستان کو غیر مستحکم کرنے والوں کو ناکام کریں گے، دشمن کے سامنے ڈٹ جانا فلسفہ حسینی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ ہزارہ برادری پر ظلم ہوا ہے، دہشتگردی میں ملوث عناصر کو کیفر کردار تک پہنچانے کیلئے ہر حد جائیں گے، بلوچستان کی محرومیوں کا خاتمہ وزیراعظم کا وژن ہے، آزمائشیں قوموں پر آتی ہیں ہم نے گبھرانا نہیں ہے۔

وزیر مملکت نے ہزارہ برادری سے استدعا ہے کہ ہماری نیت پر شک نہ کریں، بلوچستان کے ہر باسی کو ریاست عزت دے گی۔

اس سے پہلے وفاقی وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی کوئٹہ پہنچ کر وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال سے ملاقات کی، ملاقات میں بلوچستان کے امن و امان اور ہزار گنجی واقعے سے متعلق بات چیت کی، ان کے ہمراہ وزیر اعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری میں موجود تھے۔

شہریار آفریدی وزیر اعلیٰ سے ملاقات کے بعد ہزارہ ٹاؤن امام بارگاہ پہنچے، جہاں انہوں نے شہدائے ہزار گنجی کے لواحقین سے اظہار تعزیت کیا اور فاتحہ خوانی بھی کی۔