جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

سعودی عرب سے معاہدہ کہاں گیا؟ انقلاب کی طرف جا رہے ہیں، خوف کھائیں : رضا ربانی

انقلاب کی طرف

اسلام آباد : رضا ربانی کا کہنا ہے کہ آپ انقلاب کی طرف جا رہے ہیں، اس انقلاب کو لیڈ کرنے والا کوئی نہیں ہے، اس سے خوف کھائیں۔

سینیٹر رضا ربانی نے ایوان میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ  ہم پیٹرول کی قیمتوں پر بات کرنا چاہ رہے ہیں، وزیر کوئی نہیں ہیں، یہ اجلاس چلا، لیکن حکومت کو توفیق نہیں ہوئی کہ ایوان کو اعتماد میں لے۔ امریکہ جب کہتا ہے کہ ہم پاکستان سے بات کر رہے ہیں کہ فضائی حدود دی جائیں تو بے حرمتی ہوتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ آج کچھ اور ایشو ہے، اس پر بات نہیں کرتے۔ جناب چئیرمین وزیر خزانہ کے لئے تو یہ بس چار پانچ روپے ہیں۔ انہوں نے غریب عوام پر پٹرول بم گرایا قیمتیں آسمان پر چلی گئی۔ ڈالر ایک سو بہتر تہتر تک پہنچ گیا۔ 15 دن بعد پھر ایک اور ایٹم بم گرا دیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں : شوکت ترین کا ہر گھرانے کو کاروبار کیلئے 5 لاکھ روپے دینے کا اعلان

ان کا کہنا تھا کہ پیٹرول کی یہ قیمتیں آج تک کی سب سے بلند ترین قیمت ہے۔ آپ نے سعودی عرب کیساتھ جو معاہدہ کیا کہاں گیا وہ؟ وزیر خزانہ صاحب آپ نے جو معاہدہ کیا تو اس کا فائدہ کس کو ہو رہا ہے؟ سعودی عرب کی موخر ادائیگیاں کا ہمیں کیا فائدہ ہوا؟

پی پی سینیٹر نے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں یہ پیٹرول کی سب سے زیادہ قیمت ہے۔

ہمیں نہ کہیں کہ بین الاقوامی سطح پر قیمتیں بڑھیں۔ آپ ایک انقلاب کی طرف جا رہے ہیں، اس انقلاب کو لیڈ کرنے والا کوئی نہیں ہے۔ کوئی سیاسی جماعت اس قابل نہیں کہ وہ اس انقلاب کو لیڈ کرے۔

رضا ربانی کا کہنا تھا کہ جب انقلاب خود بڑھتا ہے، وہ انارکی کی طرف بڑھتا ہے، اس سے خوف کھائیں۔ بھیانک صورت حال پیدا ہو گی۔ ہماری فالٹ لائنز ہیں۔ خطے کی موجودہ صورت حال میں امریکہ اسرئیل اور نئی دہلی کا گٹھ جوڑ ہے۔ جو ہماری ایٹمی اثاثے سے نفرت کرتے ہیں وہ اس صورت خال کا فائدہ نہ اٹھائے۔ حکومت آئی ایم ایف میں دیکھنے کی بجائے غریبوں کی آنکھوں میں دیکھے۔

متعلقہ خبریں