جی ٹی وی نیٹ ورک
پاکستان

وہ کون لوگ تھے اور آئی جی سندھ کو گہرے میں لے کر کہاں گئے تھے؟ بلاول بھٹو

بلاول

کراچی: بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ کیپٹن صفدر والے واقعے پر میں شرمندہ ہوں، جو کچھ گزشتہ روز مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کے ساتھ ہوا وہ قابل مذمت ہے۔

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے بلاول ہاؤس میں پریس کانفرنس کی ہے، جس میں وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ ناصرحسین شاہ، سعید غنی اور عاجز دھامرہ شریک تھے۔

پریس کانفرنس کرتے ہوئے بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ جو کچھ گزشتہ روز مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کے ساتھ ہوا وہ قابل مذمت ہے، یہ سب کچھ میرے صوبے میں کیسے ہوا؟

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ کیپٹن صفدر والے واقعے پر میں شرمندہ ہوں، کیپٹن صفدر اور مریم نواز کو صبح سویرے ہراساں کرنا قابل مذمت ہے۔ وزیراعلی سندھ نے واقعے کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

پیپلزپارٹی کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ ہمارے صوبے کے پولیس افسران چھٹی پر جارہے ہیں، سب پولیس افسران یہی سوال کر رہے ہیں کہ وہ کون لوگ تھے اور آئی جی سندھ کو گہرے میں لے کر کہاں گئے تھے، میرے صوبے پرحملہ ہوا ہے۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ اگر میری پولیس کی کوئی عزت نہیں رہے گی تو وہ کیسے کام کریگی، اداروں کو کیپٹن صفدر والے واقعے کی تحقیقات کرنی چاہیئے۔ ہم چاہتے ہیں کہ ملک آگے بڑھے، ہمیں عوام نے تاریخی مینڈیٹ دیا ہے۔ پی ڈی ایم کا جلسہ تاریخی تھا۔

متعلقہ خبریں