جی ٹی وی نیٹ ورک
دنیا

اگلا صدر کون ہوگا؟ امریکا میں آج انتخابی میدان سجے گا

امریکا

واشنگٹن : امریکا میں آج انتخابات ہوں گے۔ ڈونلڈ ٹرمپ اور جو بائیڈن کے درمیان آج بڑا دنگل ہوگا۔

امریکی عوام اپنے اگلے صدر کے چناؤ کیلئے آج ووٹ ڈالیں گے۔ ڈیموکریٹک پارٹی کے جوبائیڈن اور ریپبلکن پارٹی کے امیدوار صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مابین کڑے مقابلے کی توقع ظاہر کی جارہی ہے۔

امریکی صدارتی انتخاب دو ہزار بیس کے آخری انتخابی جائزے کے مطابق ڈیموکریٹک امیدوار جو بائیڈن کو صدر ٹرمپ پر دس پوائنٹس کی برتری حاصل ہے۔

صحافتی اداروں این بی سی اور وال اسٹریٹ جرنل کے ووٹنگ سے قبل آخری سروے کے مطابق جو بائیڈن کو مجموعی طور پر باون فیصد جبکہ ٹرمپ کو بیالیس فیصد رائے دہندگان کی حمایت حاصل ہے۔

ان میں بارہ اہم ریاستوں ایریزونا، فلوریڈا، جارجیا، آئیووا، مشی گن، منیسوٹا، نارتھ کیرولائنا، پنسلوانیا اور وسکونسن میں جو بائیڈن کو ٹرمپ پر پینتالیس فی صد کے مقابلے میں اکاون فیصد رائے دہندگان کی حمایت حاصل ہے۔

امریکی صدارتی انتخابی مہم کے آخری روز بھی ڈونلڈ ٹرمپ ایک ریاست سے دوسری ریاست اپنے سپورٹرز سے ووٹ مانگنے کے لیے بھاگ دوڑ کرتے رہے۔

نارتھ کیرولائنا، پینسلوینیا، مشی گن اور وسکونسن سمیت چار ریاستوں کے اندر ڈونلڈ ٹرمپ اپنے چار سالہ اقتدار میں ہونے والی کامیابیوں اور پورے کئے گئے وعدوں کا ذکر کیا۔

یہ بھی پڑھیں : امریکا کا اگلا صدر کون بنے گا؟ پیشگوئی ہوگئی

ٹرمپ نے دعوی کیا کہ انہیں چار بار نوبل پیس پرائز کے لیے نامزد کیا گیا، اگر جو بائیڈن جیتے تو امریکیوں پر چار ٹریلین کے ٹیکس لگ جائیں گے، تمام کرپٹ قواتیں جو بائیڈن کو سپورٹ کررہی ہیں۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے شمالی کیر ولینا کے شہر فیٹ ویلے اور پنسولینیا کے شہر آووچا میں ریلیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جوبائیڈن ایک کرپٹ سیاستدان ہے۔ جوبائیڈن نے چین سے کروڑوں ڈالر اکھٹے کیے۔ ہم مل کر کرپٹ نظام کا خاتمہ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ ناکام سیاستدانوں کو اٹھاکر باہر پھینک دیں گے۔ امریکی عوام الیکشن ووٹنگ میں اس طاقت کا استعمال کریں گے۔

ڈیموکریٹ کے صدارتی امیدوار جوبائیڈن نے اپنے انتخابی مہم کے آخری روز پنسلوینیا کے شہر پٹس برگ میں ریلی سے خطاب میں کہا کہ ٹرمپ امریکی تاریخ میں سب سے کرپٹ اور تعصب برتنے والے صدر ہیں۔ ٹرمپ کے دور میں امریکا میں میں نوکریاں ڈھونڈنے سے بھی نہیں ملیں۔

انہوں نے کہا کہ کورونا کی وباء سے بچنے کے لیے ڈونلڈٹرمپ نے کچھ نہیں کیا، الٹا چیف وائرولوجسٹ ڈاکٹر انتھونی فاوچی کو نوکری سے برطرف کرنے کا اعلان کردیا۔ کیوں نا ہم مل کر ڈونلڈ ٹرمپ کی ہی چھٹی کردیں۔

متعلقہ خبریں