جی ٹی وی نیٹ ورک
انٹرٹینمنٹ

ادیب، ڈراما نگار، شاعر اور مترجم ڈاکٹر شمیم حنفی انتقال کرگئے

شمیم حنفی 1938ء میں سلطان پور(یو پی) میں پیدا ہوئے تھے اور ان دنوں دہلی میں مقیم تھے بھارت سے تعلق رکھنے والے شمیم حنفی نے الٰہ آباد یونیورسٹی سے ایم اے اردو اور ڈاکٹریٹ کی سند حاصل کی تھی

انھیں زمانہ طالبِ علمی میں جن صاحبانِ علم و فضل سے سیکھنے کا موقع ملا ان میں فراق گورکھپوری، احتشام حسین، ستیش چندر دیب جیسی شخصیات شامل ہیں۔

تعلیم مکمل کرنے کے بعد شمیم حنفی چھے سال علی گڑھ یونیورسٹی میں تدریس سے منسلک ہوئے اور بعد میں جامعہ ملیہ اسلامیہ سے وابستہ ہوگئے، وہ 2003ء میں اپنی ریٹائرمنٹ تک اس تعلیمی ادارے سے وابستہ رہے۔

شمیم حنفی نے تنقید کے علاوہ خاکے، ڈرامے اور کالم بھی لکھے انھوں‌ نے تراجم اور کئی اہم کتابوں کی ترتیب و تدوین کا کام بھی انجام دیا۔

یہ بھی پڑھیں: اردو شعر و ادب کا آغاز ہوا تو مختلف اصناف پر توجہ دی گئی

شمیم حنفی کو بھارت اور پاکستان کے علاوہ اردو ادب کے حوالے سے عالمی سطح پر منعقدہ تقاریب میں مدعو کیا جاتا تھا۔

انہوں نے مولوی مغیث الدین سے فارسی زبان سیکھی اور اردو ادب میں ان کی دلچسپی ان کے والد کی اردو، تاریخ اور انگریزی کے استاد سید معین الدین قادری سے قربت کا نتیجہ تھی۔

شمیم حنفی نے 1966 میں الہٰ آباد یونیورسٹی سے فلسفے میں ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی تھی۔

متعلقہ خبریں