جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

ٹک ٹاک ایپ پر پابندی کیخلاف درخواست پر آج کی سماعت کا تحریری فیصلہ جاری

ٹک ٹاک ایپ پر

اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے سوشل میڈیا ٹک ٹاک ایپ پر پابندی کیخلاف درخواست پر آج کی سماعت کا تحریری فیصلہ جاری کردیا۔

فیصلے کے مطابق عدالت کو بتایا گیا کہ پی ٹی اے کا اقدام پیکا ایکٹ کے سیکشن 37 کی خلاف ورزی ہے۔ ٹک ٹاک ایپ کو بھارت نے سکیورٹی وجوہات کی بناء پر پابندی لگائی کیونکہ وہ چین کی کمپنی کی ملکیت ہے۔ پی ٹی اے نے پب جی گیم پر پابندی کیخلاف اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے کی بھی خلاف ورزی کی تھی۔

یہ بھی پڑھیں : ٹک ٹاک کی بندش کے باوجود وی پی این کے ذریعے استعمال پر لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر

آئین کے آرٹیکل 19 کے تحت آزادی اظہار رائے اور معلومات تک رسائی شہریوں کا بنیادی حق ہے۔ عدالت کو بتایا گیا کہ ٹک ٹاک بہت سے ٹیلنٹڈ افراد کا ذریعہ معاش ہے۔ عدالت پی ٹی اے کو نوٹس جاری کرتی ہے، پی ٹی اے آئندہ سماعت پر اپنا نمائندہ پیش کرے۔ پی ٹی اے عدالت کو بتائے کہ عدالتی احکامات کی خلاف ورزی کیوں ہوئی؟

پی ٹی اے بتائے کہ عدالت پی ٹی اے کی جانب سے ٹک ٹاک کی بندش کیوں معطل نہ کرے۔

متعلقہ خبریں