جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

آپ بھی تو 126 دن بیٹھے، انہیں بھی دو ماہ بیٹھا رہنے دیتے، حکومت اپنا تھوکا چاٹے گی : رانا ثناءاللہ

آپ بھی تو 126

لاہور : رانا ثناءاللہ کا کہنا ہے کہ آپ بھی تو 126 دن بیٹھے رہے، یتیم خانہ چوک پر انہیں بھی دو ماہ بیٹھا رہنے دیتے، یہ اپنا تھوکا ایک ایک کرکے چاٹیں گے۔

لاہور ہائیکورٹ میں مسلم لیگ (ن) پنجاب کے صدر رانا ثناءاللہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان حواس باختہ ہیں، حقائق پر ان کی معلومات درست نہیں۔ پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے اسٹیٹمنٹ جاری کی گئی ہے۔ جے یو آئی اور مسلم لیگ ن نے کوئی بیان جاری نہیں کیا۔ فرانس کے سفیر کو نکالنے کے وعدے کا معاہدہ 5 ماہ میں پارلیمنٹ میں کیوں نہیں لائے؟

انہوں نے کہا کہ حکومت نے ٹی ایل پی کو کالعدم قرار دینے کا فیصلہ اپنے طور پر کیا۔ پارلیمنٹ تحریک لبیک کے لوگوں سے بات کرتی، سمجھانے والی بات سمجھائی جاتی۔ 20 اپریل کو معاہدہ ختم ہورہا تھا، تو تحریک لبیک کے سربراہ کو پہلے کیوں گرفتار کیا؟

یہ بھی پڑھیں : حکومتی قرارداد میں حصہ نہ بننے کا فیصلہ، آپ کا پھیلایا ہوا گند ہے، خود صاف کریں : بلاول بھٹو

انہوں نے مزید کہا کہ آپ معاہدہ ختم ہونے سے 10 دن پہلے ان پر چڑھ دوڑے اور گرفتاریاں شروع کردیں۔ یہ اپنا تھوکا ایک ایک کرکے چاٹیں گے، ریاست کی رٹ کو بالکل فارغ کردیا ہے۔ یہ خود سڑکیں بلاک کرتے رہے ہیں، ایسی تقاریر کرتے رہے ہیں۔ ان کے خلاف کسی نے طاقت کا استعمال نہیں کیا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کو اعتماد میں لینا چاہیے تھا، اے پی سی بلانی چاہیے تھی۔ آپ بھی تو 126 دن بیٹھے رہے،

یتیم خانہ چوک پر انہیں بھی دو ماہ بیٹھا رہنے دیتے۔ یہ پارلیمنٹ سے بھاگے ہوئے ہیں، وزیراعظم بھی پارلیمنٹ نہیں گئے۔

رانا ثناء اللہ نے کہا کہ یہ معاملہ پارلیمنٹ میں لانے کو تیار ہیں نہ سیاسی جماعتوں سے مشاورت کرنے کو۔ عمران خان نے حواس باختہ ہو کر قوم سے خطاب کیا۔ اپوزیشن کے خلاف پروپیگنڈے اور نفرت سے حکومت نہیں چلائی جاسکتی۔ رٹ منوانے کیلئے طاقت ہی استعمال نہیں کرتے، مذاکرات بھی کئے جاتے ہیں۔

لیگی رہنماء کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کو سمجھ بوجھ ہی نہیں کہ کل قوم کو اعتماد میں لیتے۔ عمران خان نے ایک طرف کا نقصان بتایا، دوسری طرف کی بات نہیں کی۔ اگر حکومت نے معاہدہ کیا ہے تو اسے پورا کرنا چاہیے۔ معاہدے میں تین وزراء اور وزیر داخلہ کے دستخط ہیں۔

متعلقہ خبریں