جی ٹی وی نیٹ ورک
بریکنگ نیوز

کورونا وباء کے دوران پنجاب میں ایم ٹی آئی ایکٹ کا نفاذ ہوا تو ہڑتال کریں گے : ینگ ڈاکٹرز

ایم ٹی

لاہور : پنجاب کے ینگ ڈاکٹرز نے کورونا کیسز میں اضافے کا ذمہ دار شاپنگ مالز کھولنے کے حکومتی فیصلے کو قرار دے دیا، ایم ٹی آئی ایکٹ کے نفاذ پر ہڑتال کا عندیہ بھی دے دیا

لاہور جنرل اسپتال میں ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے عہدیداران نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر صحت پنجاب یاسمین راشد کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

ڈاکٹر عمار یوسف نے کہا کہ وزیر صحت کو معلوم نہیں کہ اسپتالوں میں کتنے افراد کی ٹیسٹنگ کی جا رہی ہے، حکومت اعداد و شمار خفیہ رکھ رہی ہے۔

ڈاکٹر عمار یوسف نے ہڑتال کا عندیہ دیتے ہوئے کہا کہ اگر ڈاکٹرز کو آئسولیشن رومز، اسٹینڈرڈ کٹس اور ماسک نہ دیئے گئے تو او پی ڈیز میں کام نہیں کریں گے۔

یہ بھی پڑھیں : پنجاب بھر میں ایم ٹی آئی ایکٹ پر ہڑتال جاری، اہم شاہراہوں کو بند کرنے کا اعلان

انہوں نے تنبیہ کی ہے کہ اگر کورونا کی وباء کی آڑ میں ایم ٹی آئی ایکٹ نافذ کرنے کی کوشش کی گئی تو اس کی ذمہ داری وزیر اعلیٰ پر آئے گی۔

ینگ ڈاکٹرز کا کہنا تھا کہ کورونا وباء کے دوران پیپرا کے رولز کو امینڈ کر کے اسپتالوں کو خرید کی اجازت دی گئی۔ ایکسپو سینٹر میں پچیس ہزار کا ایک سرہانہ اور گدا خریدا گیا۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ خریدے گئے تمام سامان کا آڈٹ کروایا جائے۔

متعلقہ خبریں